Facebook Facebook Facebook Facebook

Categories

سندھ میں چار لاکھ سے زائد بچے پولیو کے قطروں سے محروم رہے

Posted by
Published: November 15, 2016 05:06 pm

اسلام آباد : سندھ حکومت نے اعتراف کیا ہے کہ جون 2013 سے جنوری 2014 تک صرف سات ماہ کی مدت میں صوبے کے چار لاکھ سے زائد بچے پولیو کے قطروں سے محروم رہے ۔ سمدھ اسمبلی کے 28 ویں اجلاس کی پہلی نشست میں ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے وزیر صحت سکندر علی میندھرو نے ایوان کو بتایا کہ اس عرصے مٰن مجموعی طور پر چار لاکھباون ہزار ایک سو سات بچے پولیو کے قطرے پینے سے محروم رہے ۔ فاضل رکن نائلہ منیر کے نشانذدہ سوال نمبر 3683 کے جواب میں  وزیر موصوف نے اس عرصہ کے دوران قطروں سے محروم رہ جانیوالے بچوں کی ضلع وار تعداد بھی بتائی ۔ وزیر صحت کے مطابق اس عرصے میں ضلع کراچی کے دو لاکھ پینتیس ہزار چار سو انتالیس ، بدین کے ایک ہزار اکیانوے ، دادو کے پینتیس سو ، گھوٹکی کے پانچ ہزار چار سو اکہتر ، حیدر آباد کے 55 ہزار 4 سو 76 ، جیکب آباد کے 5ہزار2سو 58 ، جامشورو کے 22 ہزار 9 سو 22، قمبر کے 14 ہزار 4 سو 95 ، کشمور کے 3 ہزار 8 سو 12 ، خیر پور کے 9 ہزار 7 سو 61، لارکانہ کے 10 ہزار 82 ، مٹیاری کے 6 سو 71 ، میر پور خاص کے 34 ہزار 86 ، نوشہرو فیروز کے 2ہزار 4 سو 19، سانگھڑ کے 26ہزار 6 سو 45 ، بے نظیر آباد کے 3 ہزار 8 سو 12 ، شکار پور کے  8ہزار ایک سو 57، سکھر کے 6ہزار 2 سو چار، ٹنڈو الایار کے 4ہزار 402 ،تھرپار کر کے 5 ہزار 3 سو سات ،ٹھٹھہ کے 5 ہزار 9 سو 29 ، ٹنڈو محمد خان کے ایک ہزار دو سو تراسی اور عمر کوٹ کے 13 ہزار چھ سو گیارہ بچے  پولیو کے قطرے پینے سے محروم رہے ۔

Posted by on November 15, 2016. Filed under خصوصی رپورٹس. You can follow any responses to this entry through the RSS 2.0. You can leave a response or trackback to this entry