Facebook Facebook Facebook Facebook

Categories

سندھ اسمبلی:خواتین کو تشدد سے بچانے کے قوانین پر عمل کیا جائے : قرارداد

Posted by
Published: November 25, 2016 06:33 pm

اسلام آباد ، 25نومبر 2016:سندھ  کی صوبائی اسمبلی کے  28 ویں اجلاس کی آٹھویں نشست میں ایوان نے   نظام کار پر موجود تمام امور نپٹائے اور خواتین کیخلاف تشدد کے سد باب کے قوانین پر مکمل عمل در آمد یقینی بنانے کی قرارداد متفقہ منظور کی ۔

قرارداد منظور ایوان کی کارروائی کے خاص نکات

  • نشست کا دورانیہ02 گھنٹے30منٹ رہا ۔
  • نشست مقررہ وقت دس بجے صبح کی بجائے  11 بج کر ط10 منٹ پر شروع ہوئی ۔
  • تین منٹ کیلئے وقفہ نماز ہوا ۔
  • سپیکر نے55 منٹ کیلئے نشست کی صدارت کی  بقیہ کارروائی ڈپٹی سپیکر نے نبھائی ۔
  • قائد ایوان شریک نہ ہوئے،قائد حزب اختلاف 45 منٹ تک ایوان میں موجود رہے ۔
  • نشست کےآغاز پر 36( 21فیصد ) جبکہ اختتام پر 46(27فیصد) اراکین کی موجودگی مشاہدہ کی گئی ۔
  • پیپلز پارٹی اور پاکستان تحریک انصاف کے پارلیمانی قائدین نے شرکت کی ۔
  • تین اقلیتی رکن شریک ہوئے ۔
  • چودہ اراکین نے رخصت کی درخواستیں ارسال کیں ۔

کارکردگی

  • ایوان نے شہید ذوالفقار علی بھٹو یونیورسٹی آف لا ، کراچی (ترمیمی) بل 2016 متعلقہ مجلس قائمہ کے سپرد کر دیا ۔
  • ایوان نے ضمنی ایجنڈے کے طور پر ایک متفقہ قرارداد منظور کی اور حکومت پر زور دیا کہ ایوان سے منظور کئے گئے ان قوانین پر سختی سے عمل کیا جائے جو خواتین کو تشدد سے بچانے کیلئے منظور کئے گئے ہیں ۔

نمائندگی و جوابدہی

  • نظام ہائے کار پر موجود پانچ نشانذدہ سوالات میں  سے چارسوالات  اٹھائے گئے ، متعلقہ وزرا نے جوابات دیئے ۔ اراکین نے اکیس ضمنی سوالات بھی دریافت کئے ۔
  • سپیکر نے صوبے کے سرکاری محکموں مین بھرتیوں سے  متعلق تحریک انصاف کے ایک رکن کی پیش کی گئی تحریک کو مسترد کردیا۔ دو اراکین نے تحریک پر دس منٹ بحث بھی کی ۔
  • ایوان نےعوامی اہمیت کے مختلف مسائل پر پیش پانچ توجہ دلاؤ نوٹس اٹھائے ۔
  • ایوان نے سید اعجاز حسین بخاری کو   پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کے رکن کے طور پر  منتخب کیا ۔

نظم و ضبط

  • دو اراکین نے دو نکتہ ہائے اعتراض پر چار منٹ اظہار خیال کیا ۔

شفافیت

  • ایجنڈے کی نقول تمام اراکین ، مشاہدہ کاروں اور دیگرکیلئے دستیاب تھیں ۔
  • اراکین کی حاضری کی تفصیل مشاہدہ کاروں  اور عوام کیلئے دستیاب بنائی گئی  ۔

 

(یہ فیکٹ شیٹ فری اینڈ فئیر الیکشن نیٹ ورک   کی شریک  کار تنظیم پاکستان پریس فاؤنڈیشن   کی جانب  سے سندھ اسمبلی کی کاروائی کے براہ راست مشاہدے پر مبنی ہے۔ ادارہ ممکنہ غلطی  یا کوتاہی پر پیشگی معذرت خواہ ہے۔)

Posted by on November 25, 2016. Filed under سندھ اسمبلی. You can follow any responses to this entry through the RSS 2.0. Both comments and pings are currently closed.