Facebook Facebook Facebook Facebook

Categories

کثیر القومی کمپنیوں کومشترکہ سماجی ذمہ داریوں کی ادائیگی کا پابند بنایا جائے : بلوچستان اسمبلی

Posted by
Published: November 14, 2016 02:32 pm

اسلام آباد : بلوچستان کی صوبائی اسمبلی  وفاقی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ نے صوبے میں مصروف کار کثیر القومی کمپنیوں کو مشترکہ سماجی ذمہ داریوں  کی ادائیگی کا پابند بناینے کیلئے قانون سازی کی جائے ۔ ایوان کے 35 ویں اجلاس کی چوتھی نشست مین رکن اسمبلی پرنس علی اھإد کی طرف سے پیش قرارداد نمبر 114 میں فاضل رکن نے کہا کہ یہ ایک  مسلمہ حقیقت ہے کہ ملک میں قائم  کثیر القومی کمپنیاں اور دیگر بڑے بڑے منصو بوں پر بڑے پیمانے پر سر مایہ کاری کی جاتی ہے جسکی وجہ سے معاشی اور سماجی سطح پر ذمہ داریوں کی انجام دہی ہو تی ہے چو نکہ سی ایس آر ( مشترکہ سماجی ذمہ داریوں)میں طویل المعیاد سر مایہ کاری ہوتی ہے لیکن قانون سازی نہ ہونے کی بناء سر مایہ کاری کا عمل یا تو یکسر نظر انداز کیا جا تا ہے یا سماجی اور فلاح کے لئے کیا جا تا ہے،جو معاشی ترقی کے لیئے استعمال ہوتی ہے ۔اس  لئےایسے اداروں کو یہ احساس ہو نا چاہے کہ وہ جس معاشرے سے منافع کماتے ہیں اس حوالے سے ان پر کچھ ذمہ داریاں بھی عائد ہوتی ہیں ۔اس لئے اخلاقیات سے بھر پور سماجی عزائم سے مامور افراد جن میں یہ صلاحیت ہونی چاہیے کہ وہ سی ایس آر کی ذمہ داریاں بطریق حسن انجام دے سکیں۔ تا کہ منافع میں حقدار کو اسکا حق ملے اور  منصوبے کی کارکر دگی نما یاں ہو سکے ۔ قرارداد میں یہ بھی زور دیا گیا ہے کہ   صوبے کی  ضلعی انتظامیہ  کو  حکم دیا جائے کہ و مالکان اور سر مایہ دارو ں کو مشترکہ سماجی ذمہ داریوں( سی ایس آر ) پرمکمل در آمد کرائیں اور اس حوالے سے  شفافیت   کو یقینی بنایاجائے۔ ایوان  نے صوبائی حکومت سے سفارش  کی کہ وہ سی ایس آرکے لیئے واضح طریقہ کار مرتب کر کے اسے قانونی تحفظ دینے کے لیئے قانون سازی کو یقینی بنائے۔ اور شپ بریکنگ یارڈ اور  کان کنی کے شعبوں پر بھی اسکا اطلاق کیا جائے ۔

Posted by on November 14, 2016. Filed under خصوصی رپورٹس. You can follow any responses to this entry through the RSS 2.0. You can leave a response or trackback to this entry