Facebook Facebook Facebook Facebook

Categories

ضابطہ دیوانی ترمیمی بل 2016 سمیت اہم قانونی مسودات منظور

Posted by
Published: November 28, 2016 03:58 pm

اسلام آباد ، 28 نومبر 2016 :ایوان بالا (سینیٹ ) کے  حال ہی میں ختم ہونیوالے 255 ویں اجلاس میں ایوان نے چھ قانونی مسودات پاکستان انجینئرنگ کونسل (ترمیمی) بل 2016 ، ضابطہ دیوانی (ترمیمی) بل 2016 ، مرکزی قانونی افسران (ترمیمی) بل 2016 ، اسلام آباد ہائیکورٹ (ترمیمی) بل 2016 ، اسلام آباد ہائیکورٹ (ترمیمی) بل 2016 اور پلانٹ بریڈرز رائٹس بل 2016 کی منظوری دی ۔پاکستان انجینئرنگ کونسل (ترمیمی) بل 2016 کا مقصد پاکستان آرمی کے انجینئرنگ چیف کی پاکستان انجینئرنگ کونسل کی گورننگ باڈی میں شمولیت کو قانونی تحفظ فراہم کرنا ہے،ضابطہ دیوانی (ترمیمی) بل 2016 ، کے ذریعے گنجائش پیدا کی گئی ہے کہ  کسی بھی نوعیت کی تکلیف کا باعث امور اور سرکاری خیراتی اداروں کی صورت میں ایڈووکیٹ جنرل یا دو یا اس زیادہ افراد عدالت کی اجازت کیساتھ عدالتی اعلامیئے اور حکم کیلئے یا  مقدمے کے حالات کے پیش نظر عدالت جو ریلیف مناسب سمجھے کے حصول کیلئے دعویٰ دائر کر سکتے ہیں ۔ قانون و انصاف کمیشن  نے  اس نوعیت کے مقدمات میں عدالت کی اجازت کیساتھ اور ایڈووکیٹ کی اجازت کے بغیر دائر کرنے کیلئے متذکرہ دفعہ میں ترمیم کیلئے سفارش  کی تھی ۔ مجوزہ قانون سازی کے بروئے کار آنے سے دعووں کو جلد نمٹانے میں مدد ملے گی ۔مرکزی قانونی افسران (ترمیمی) بل 2016 ، کا مقصد  اٹارنی جنرل آف پاکستان کی سفارشات کی روشنی میں مرکزی لا افسران آرڈیننس 1970 (7 آف 1970) میں ترمیم کرتے ہوئے سٹینڈنگ کونسل کی آسامی کو اسسٹنٹ اٹارنی جنرل قرار دینا ہے ۔ اسلام آباد ہائیکورٹ (ترمیمی) بل 2016 ، کا مقصد وفاقی علاقہ  اسلام آباد ہائیکورٹ اور سول کورٹس  کے دائرہ اختیار سمات کو دیگر صوبوں کی ہائیکورٹوں و سول عدالتوں  کے ہم پلہ  بنانا ہے ۔اس اقدام سے اسلام آباد ہائیکورٹ پر کام کا بوجھ بھی  کم ہوگا جبکہ پلانٹ بریڈرز رائٹس بل 2016 ، کا مقصد پودوں کی نئی اقسام کا فروغ اور نئی اقسام کاشت کرنیوالوں کے حقوق کا تحفظ کرنا ہے ۔

Posted by on November 28, 2016. Filed under خصوصی رپورٹس. You can follow any responses to this entry through the RSS 2.0. Both comments and pings are currently closed.